Return to the talk Return to talk

Transcript

Select language

Translated by Fahad Zaki
Reviewed by Jamshed Azam

0:11 میں چاہتی ہوں کہ آپ دوبارہ غور کریں کہ انسان دوستی کیا ہے ، کیا ہوسکتی ہے، اور اس کے ساتھ آپ کا کیا تعلق ہے - اور اس طرح ، میں آپ کو ایک تصوّر پیش کرنا چاہتی ہوں ، ایک مستقبل کا خیال ، اگر آپ چاہیں ، کہ ، جیسے شاعر 'شیماس ہینی' نے کہا، " زندگی میں ایک دفعہ انصاف کی لہر ، جس کی خواہش کی گئی ، اونچی اٹھے گی ، اور امید اور تاریخ شاعری کی طرح ہونگی -"

0:39 میں ان الفاظ کے جوڑوں سے شروعات کرنا چاہتی ہوں - ہمیں معلوم ہے کہ ہم کس طرف رہنا چاہتے ہیں - جب ایک صدی پہلے انسان دوستی کو دوبارہ ایجاد کیا گیا تھا ، جب اداروں کی صورت کو واقعی ایجاد کیا گیا ، انہوں نے بھی اس کے غلط حصّے کی طرف اپنے اپ کو نہیں سوچا - دراصل وہ اس طرح اپنے بارے میں سوچ نہیں سکتے تھے کہ وہ تنگ نظر اور اپنے کام میں مصروف ہوں ، کہ وہ نئی مشکلات کا جواب سستی سے دیں ، کہ وہ چھوٹے ہوں اور خطرات سے بھاگتے ہوں- اور دراصل وہ یہ نہیں تھے - اس وقت خیراتی ادارے ایجاد کر رہے تھے ، جسے روکا فیلر نے " خیرات کے کاروبار " کا نام دیا - مگر بیسویں صدی کے آخر میں ، ناقدین اور اصلاح پسندوں کی ایک نئی نسل نے انسان دوستی کو بالکل اسی طرح دیکھا -

1:21 جو چیز دیکھنے کی ہے جب عالمی انسانی دوستی سامنے آئے گی -- اور وہ بالکل وہی ہو رہا ہے -- کہ وہ کیسی خواہش ہے کہ ان پرانے مفروضات کو پھینکا جاۓ ، تاکہ انسان دوستی طویل مدّتی بننے کے لئے کھلی اور بڑی اور تیز اور جڑی ہوئی بن جاۓ- یہ کاروباری قوّت بہت سی جگہوں سے ابھر رہی ہے - اور یہ ، یہاں موجود بہت سے لوگوں کی طرح کے ، نئے رہنماؤں کی وجہ سے ، چل رہی ہے اور آگے بڑھ رہی ہے ، نئے طریقوں سے ، جیسے کہ ہم نے یہاں دیکھے ہیں ، اور نئے زور سے -

1:49 میں اس تبدیلی کو کافی عرصے سے دیکھ رہی ہوں اور اس میں حصّہ لے رہی ہوں - یہ رپورٹ ہماری بنیادی عام رپورٹ ہے - یہ ایک کہانی سناتی ہے کہ کس طرح آج کا دن ایک تاریخی دن ہوگا جس طرح 100 سال پہلے تھا - میں آج کل ہونے والی دلچسپ چیزوں کے بارے میں بتانا چاہتی ہوں- اور یہ کرنے کے دوران ، میں انسان دوستی کے اس بڑے حصّے کے بارے میں زیادہ نہیں بولوں گی ، جس کے بارے میں سب کو معلوم ہے - جیسے 'گیٹس' یا 'سوروس' یا 'گوگل'- بلکہ میں چاہتی ہوں کہ میں ہم سب کی انسان دوستی کی بات کروں : انسان دوستی کی جمہوریت کے بارے میں - یہ تاریخ کا وہ وقت ہے کہ عام انسان کے پاس پہلے وقتوں سے زیادہ طاقت ہے -

2:29 میں پاچ اقسام کے تجربات کا جائزہ لوں گی ، جو ایک پرانے مفروضے کو چیلنج کرتے ہیں - پہلا ، بڑے پیمانے پر تعاون ہے ، جس کی نمائندہ یہاں وکی پیڈیا ہے - اب یہ آپ کو شاید حیران کردے - مگر یاد رکھیے ، انسان دوستی کا تعلق وقت اور ہنر دینے سے ہے ، صرف پیسے دینے سے نہیں - کلے شرکی ، جو کہ ہر جڑی ہوئی چیز کا بڑا مؤرخ ہے ، نے اس مفروضے کو محفوظ کرلیا ہے جو اس کو بڑی خوبصورتی کے ساتھ چیلنج کرتا ہے - اس نے کہا ، " ہم ایک ایسی دنیا میں رہتے ہیں جہاں چھوٹی چیزیں محبّت کے لئے کی جاتی ہیں اور بڑی چیزیں پیسے کے لئے کی جاتی ہیں - اب ہمارے پاس 'وکی پیڈیا' ہے - اچانک ہم بڑی چیزیں محبّت کے لئے کرسکتے ہیں -"

3:08 اس موسم بہار دیکھیے ، پال ہاکنس کی نئی کتاب -- ایک ادیب اور کاروباری شخص جسے آپ بہت سارے لوگ شاید جانتے ہوں -- کتاب کا نام ' بلے سیڈ ان ریسٹ ' ہے - اور جب یہ منظرعام پر آۓ گی ، تو 'وائزر' کے نام سے سلسلہ وار وکی سائٹس کا افتتاح ہوگا- 'وائزر' سمجی اور ماحولیاتی ذمہ داری کے عالمی انڈکس کا مخفف ہے 'وائزر' کا مقصد دستاویز بنانا ، جوڑنا اور طاقت دینا ہے - اس چیز کو جسے پال انسانی تاریخ کی سب سے بڑی اور سب سے تیز پھیلنے والی تحریک کہتے ہیں : آج کی مشکلات کے لئے انسانیت کا مجموعی دفاعی جواب - اب ، یہ تمام چیزیں جو محبّت کے لئے ہیں -- تجربات -- کامیابی سے ہمکنار نہیں ہونگی - مگر جو ہوں گی وہ انسانی تاریخ کی سب سے بڑی ، سب سے کھلی ، سب سے تیز ، سب سے جڑی ہوئی انسانی دوستی کی صورت میں ہوں گی

3:51 دوسری قسم آن لائن انسان دوستی کے کاروباری مراکز ہیں - یہ انسان دوستی کے لئے بالکل اسی طرح ہیں جو 'ای بے' اور 'ایما زان' کامرس کے لئے ہیں - اس کو ہم مرتبہ سے ہم مرتبہ انسسان دوستی سمجھیے - اور یہ ایک اور مفروضے کو چیلنج کرتا ہے ، جو یہ ہے کہ منظم انسان دوستی صرف بہت امیر لوگوں کے لئے ہے - ڈونرز چوز کو دیکھئے ، اگر آپ نے نہیں دیکھا ہو تو ، 'امیدیار نیٹورک' نے 'ڈونرزچوز' میں بڑا سرمایہ لگایا ہے - یہ ان کاروباری مراکز میں ایک مشہور مرکز ہے جہاں مددگار سیدھے کلاس روم میں جاکر استاد کی ضروریات کے لئے ان سے جڑ سکتا ہے- 'چینجنگ دا پریزنٹ' کو ذرا دیکھئے ، جسے ایک ٹیڈ کے شخص نے شروع کیا ، اگلی بار جب آپ کو شادی یا چھٹی کا تحفہ چاہیے ہو - ' گیو انڈیا ' ایک پورے ملک کے لئے ہے - اور یہ سلسلہ چلتا جاتا ہے -

4:32 تیسری قسم کے نمائندہ 'وارین بففیٹ' ہیں ، جسے میں مجموعی امداد کہتی ہوں - یہ بات نہیں ہے کہ وارین بففیٹ بہت زیادہ سخی تھا اس تاریخی کام کی وجہ سے جو اس نے پچھلے موسم گرما میں کیا تھا - اصل میں اس نے ایک اور مفروضے کو چیلنج کیا تھا ، کہ ہر شخص کے پاس اس کا اپنا فنڈ یا ادارہ ہونا چاہیے - آج یہاں ، بہت سارے نتے فنڈ ہیں جو مجموعی امداد کر رہے ہیں ، تعاون دے رہے ہیں اور سرمایا کاری کر رہے ہیں ، اور لوگوں کو ، ایک متفقہ مقصد کے گرد، ساتھ ملا رہے ہیں ، اور وہ ہے بڑا سوچنا - ان میں سے ایک بہترین ، آکیومن فنڈ ہے ، جسے جاکلین نوووگراٹز چلا رہی ہیں ، ایک ایسی ٹیڈ کی نمائندہ جن کو ٹیڈ سے بہت مدد ملی ہے - مگر اور بھی بہت سارے ہیں: 'نیو پرافٹ ان کیمبرج'، 'نیو اسکولز وینچر فنڈ' جو سیلیکون ویلی میں ہے ، 'وینچر فلانتھروپی پارٹنرز' جو واشنگٹن میں ہے ، 'خواتین کا عالمی فنڈ' جو سان فرانسسکو میں ہے - ان کو دیکھئے - یہ فنڈ انسان دوستی کے لئے ایسے ہی ہیں ، جیسے وینچر کیپٹل ، پرائیویٹ ایکوئٹی ، اور میوچل فنڈ سرمایہ کاری کے لئے ہیں ، مگر ایک دلچسپ تبدیلی کے ساتھ -- کیونکہ بہت بار ایک برادری ان فنڈ کے گرد بنتی ہے ، جیسے کہ آکیومن اور دوسرے ادارے -

5:38 اب ایک لمحے کے لئے فرض کریں ان تین قسم کے تجربات کو : بڑے پیمانے پر تعاون ، آن لائن کاروباری مراکز ، اور اجتماعی امداد - اور غور کریں کہ یہ کس طرح منظّم انسان دوستی کے بارے میں ہمیں دوبارہ سوچنے میں مدد کرتے ہیں - ضروری نہیں کہ اس کا تعلق اداروں سے ہو ؛ اس کا تعلق ہم سب سے ہے - اور فرض کیجیے مستقبل میں ان چیزوں کے جوڑ توڑ کو ، جب یہ مستقبل کے تجربات کے ذریعے مل جائینگی -- فرض کیجیے کہ کوئی شخص 100 ملین ڈالر ایک حوصلہ افزأ مقصد کے لئے مختص کردیتا ہے -- پچھلے سال ، امریکا میں ، 100 ملین ڈالر کے 21 یا اس سے زیادہ ، تحفے دیے گۓ تھے ، یہ ناممکن نہیں ہے -- مگر وہ شخص اس شرط پر مختص کرتا ہے کہ دنیا بھر سے ، لاکھوں اور چھوٹے تحفے بھی ساتھ دیے جائیں ، اور اس طرح بہت سارے لوگ اس میں شامل کرے ، اور اس کے مقصد کے مطابق اس کے پھیلاؤ پر کام کرنا ہو -

6:28 میں جلدی جلدی چوتھی اور پانچوی قسم کا ذکر کرتی ہوں ، جو کہ جدّت ، مقابلہ ، اور سماجی سرمایہ کاری ہیں - وہ سوچ رہے ہیں کہ ایک نظر آنے والا مقابلہ ، ایک انعام ، ہنر اور پیسے کو کچھ مشکل ترین مسائل کی جانب کھنہ سکتے ہے ، اور اس طرح حل جلدی مل جاتے گا - یہ ایک اور مفروضے کو چیلنج کرتا ہیں ، کہ خیرات دینے والا اور خیراتی ادارہ ، مرکزی کردار ہوتے ہیں - بجاتے اس کے کہ مسئلہ مرکزی کردار ہو - آپ ان جدّت پسندوں کی جانب دیکھ سکتے ہیں کہ وہ مدد کریں ، خاص طور پر ، ان چیزوں کے ساتھ جنہیں سائینسی اور ٹیکنالوجی والے حل چاہیے ہوں -

7:01 آخری قسم سماجی سرمایہ کاری ہے - جو واقعی ان سب سے بڑی ہے ، جس کی نمائندگی Xigi.net کر رہی ہے- اور یہ بلاشبہ سب سے بڑے مفروضے کو چیلنج کرتی ہے ، وہ مفروضہ یہ ہے کہ، کاروبار -- بلآخر کاروبار ہوتا ہے ، اور انسان دوستی ان لوگوں سے بنتی ہے جو دنیا میں تبدیلی لانا چاہتے ہیں - 'زیگی' ایک نئی برادری سائٹ ہے جو کہ برادری کے ذریعے بنی ہے ، اور جو اس سماجی سرماۓ کی مارکیٹ کو جوڑتی ہے اور دستاویزی شکل دیتی ہے - یہ ابھی سے 1000 اداروں کی فہرست فراہم کرتی ہے جو سماجی انٹرپرائز کو قرضہ اور سرمایہ دے رہے ہیں - تو ہم ان جدّت پسندوں کی جانب دیکھ سکتے ہیں تاکہ وہ ہمیں یاد دلائیں کہ اگر ہم تھوڑے سے سرماۓ سے بیعانہ لے سکتے ہیں جو ہمیں واپس چاہیے تو نتیجتاً جو اچھائی کام میں آسکتی ہے ، وہ حیران کن ہوگی -

7:51 اب جو دلچسپ بات ہے وہ یہ ہے کہ ہم کام کو نۓ طریقے سے نہیں سوچ رہے ہیں ؛ بلکہ ہم کام کرکے نئی سوچ پیدا کر رہے ہیں - انسان دوستی اپنے آپ کو ہماری آنکھوں کے سامنے دوبارہ منظّم کر رہی ہے - اور اگرچہ تمام تجربات اور تمام بڑے مخیر لوگ اس خواہش کوابھی پورا نہیں کرتے ، میرے خیال میں یہ نیا زیٹگایست ہے : کھلا ، بڑا ، تیز ، جڑا ہوا ، اور ، ہم امید کرتے ہیں ، کہ دیرپا بھی ہو - ہمیں اس بات کا احساس ہونا چاہیے کہ ان کاموں کو کرنے میں ایک بڑا عرصہ لگے گا - اگر ہم اپنے اندر مستقل مزاجی کی طاقت پیدا نہیں کرتے -- جس کام کو آپ چنیں ، اس کے ساتھ جڑے رہیں -- تو پھر یہ سب کچھ ایک عارضی شوق ہوگا -

8:35 مگر میں پرامید ہوں - اور میں پر امید ہوں کیونکہ نہ صرف انسان دوستی منظّم ہورہی ہے ، بلکہ ان میں شامل ہیں سماجی اور کاروباری سیکٹر کے وہ حصّے ، جو کاروباری مفروضوں کو چیلنج کر رہے ہیں - کہ "کاروبار تو چلتا رہتا ہے"- اور میں جہاں بھی جاتی ہوں ، بشمول ٹیڈ کے ، مجھے محسوس ہوتا ہے کہ ایک اخلاقی بھوک ہے جو بڑھ رہی ہے - ہم دیکھ رہے ہیں کہ لوگ دقت محسوس کر رہے ہیں کہ یہ جو نئی چیز ہے اس کو کیسے بیان کریں - زیر استعمال الفاظ ہیں جیسے ، "فلانتھرو کیپیٹلزم " اور "نیچرل کیپیٹلزم" اور "فلانتھرو اینٹرپرنور" اور "وینچر فلانتھروپی"- ہمارے پاس اس کے لئے ابھی زبان نہیں ہے- ہم اسے جو چاہے کہیں ، یہ نئی ہے ، یہ شروعات ہے ، اور مجھے لگتا ہے کہ یہ بہت اہم ثابت ہوگی -

9:20 اور یہاں میرا تصوّراتی مستقبل سامنے آتا ہے ، جسے میں 'سماجی امتیاز' کہتی ہوں - آپ میں سے بہت سے لوگوں کو لگے گا کہ میں سائنس فکشن کے ادیب 'ورنر وینگیز' کے ٹیکنالوجی امتیاز سے مواد چرا رہی ہوں ، جہاں کچھ رجحانات بڑھتے اور ملتے ہیں اور آپس میں میں تعاون سے ایک خوفناک نئی حقیقت تخلیق کرتے ہیں - یہ ممکن ہے کہ آنے والا 'سماجی امتیاز' ایک ایسی چیز ہے جس کا ہمیں بہت خوف ہے : جیسے حادثات کا ملاپ ، ماحولیاتی خرابی ، بڑے پیمانے پر تباہی کرنے والے ہتھیاروں کا پھیلاؤ ، وبائی بیماریوں کا پھیلنا ، غربت کا بڑھنا - یہ اس وجہ سے ہے کیونکہ ہماری مسائل کا سامنا کرنے کی صلاحیت اس حساب سے نہیں بڑھی جس حساب سے ہم مسائل پیدا کرتے ہیں - اور جس طرح ہم نے یہاں سنا ہے ، اور یہ کوئی مبالغہ نہیں ہے کہ ہماری تہذیب کا مستقبل پہلے سے کہیں زیادہ ہمارے ہاتھ میں ہے-

10:12 سوال یہ ہے کہ ، کیا کوئی مثبت سماجی امتیاز بھی ہے؟ کیا ہمارے لئے کوئی حد ہے کہ ہمیں کس طرح ایک ساتھ رہنا چاہیے ؟ ضروری نہیں کہ ہمارا مستقبل تصوّراتی ہو - ہم ایک مستقبل بنا سکتے ہیں جہاں امید اور ماضی ہم وزن ہوں- مگر ایک مسئلہ ہے - اب تک ہمارے تجربے نے ، انفرادی اور مجموعی ، دونوں طور پر ، ہمیں تیار نہیں کیا کہ ہم کو کیا کرنا چاہیے ، یا ہمیں کیا بننا چاہیے - ہمیں نئی نسل کے شہری رہنماؤں کی ضرورت پڑیگی جو تیار ہوں ، جتنا جلدی ہوسکے ، اپنے آپ کو بڑھانے، تبدیل کرنے اور سیکھنے کے لیے - اسی وجہ سے ایک آخری چیز ہے جو میں آپ کو دکھانا چاہتی ہوں -

10:54 یہ میرے دادا اور پر دادا کی 100 سال پہلے اتاری گئی تصویر ہے - یہ اخبار کے ناشر اور ایک بینکار ہیں - اور یہ برادری کے بہت بڑے لیڈر تھے - اور ہاں ، یہ انسان دوست بھی تھے - میں اس تصویر کو اپنے پاس رکھتی ہوں -- یہ میرے آفس میں رہتی ہے -- کیونکہ میں نے ہمیشہ سے ، ان دونوں آدمیوں سے ، ایک روحانی تعلق محسوس کیا ہے ، جب کہ میں دونوں سے کبھی نہیں ملی - اور ان کو خراج تحسین پیش کرنے کے لئے میں آپ کو یہ خالی سلائڈ پیش کرتی ہوں - اور میں چاہتی ہوں کہ آپ تصوّر کریں کہ یہ تصویر آپ کی ہے - اور میں چاہتی ہوں کہ آپ سوچیں اس برادری کا جس کے بنانے میں آپ حصّہ دار بننا چاہتے ہیں - اس کے جو بھی معنی ہیں آپ کی نظروں میں - اور میں چاہتی ہوں کہ آپ تصوّر کریں کہ ابھی اس وقت 100 سال ہوچکے ہیں ، اور آپ کے پوتے یا پرپوتے ، یا بھتیجے یا بھتیجیاں یا منہ بولے بچے ، آپ کی تصویر کو دیکھ رہے ہیں - وہ کونسی کہانی ہے جو آپ، سب سے زیادہ، ان سے سننا چاہتے ہیں؟ بہت بہت شکریہ - ( تالیاں )